صرف 2 دانے نہار منہ

آج ہر کوئی پیٹ کی بیماری میں مبتلا ہے پیٹ اگر خراب ہو تو یہ ہمارے جسم کا بیلنس بگاڑ دیتا ہے کہتے ہیں کہ پیٹ ہی تمام بیماریوں کو جنم دیتا ہے پیٹ خراب کب ہوتا ہے جب ہم بازار کا زیادہ کھا نا کھا لیتے ہیں یا جنک فورڈ کا زیادہ استعمال یا پھر آج کل کا ماحول اور ذہنی دباؤ اور مصروف زندگی جس سے ہماری مشکلات شروع ہو تی ہیں اگر ہمارا پیٹ خراب ہے تو نہ کچھ ہم کھا سکتے ہیں اور نہ ہی کچھ پی سکتے ہیں اور سارا دن ہمارا بے چینی میں ہی گزرتا ہے اور ہمیں نیند بھی نہیں آتی ہے آملہ کے استعمال سے سو سے زیادہ سے بیماریوں کا علاج کیا جا سکتا ہے۔آملہ پیٹ کی بیماریوں کو دور کر تا ہے آملہ میں بے شمار طبی خصوصیات موجود ہوتی ہیں اس میں وٹامن سی بھی بھر پور مقدار میں ہوتا ہے آملہ سردی کے موسم میں آسانی سے مل جا تا ہے اور اس کو کسی بھی شکل میں کھا یا جا تا ہے

یہ اپنی خصوصیات کو نہیں چھوڑتا چاہے پھر وہ خشک آملہ ہو کچا آملہ کا اچار ہو یا پھر آملہ کی چٹنی ہو آملے کو جس بھی شکل میں کھا یا جا ئے اس کے تو فائدہ ہی ہوتے ہیں حاملہ عورتوں کو آملہ کسی نہ کسی شکل میں ضرور فائدہ پہنچا تا ہے اور اس کو ضرور استعمال کر نا چاہیے ایک آملہ ایک انڈے کے برابر طاقت دیتا ہے۔اور پیٹ کی بیماریوں کو دور کرنے کی طاقت ہوتی ہے ہمیں آملہ کسی نہ کسی شکل میں ضرور کھا نا چاہیے ہر کسی کو ہر روز کسی نہ کسی شکل میں آملہ کو ضرور کھا نا چاہیے اس سے لوگوں کو بہت ہی زیادہ فائدے حاصل ہو سکتے ہیں۔ پچاس گرام آملہ ضرور کھا نا چاہیے کیونکہ ایک آملہ دو مالٹوں جتنا کام کرتا ہے کیونکہ اس میں پائے جانے والا وٹامن سی ہماری صحت کو ٹھیک رکھنے میں مدد دیتا ہے تو آئیے جانتے ہیں کہ آملہ پیٹ کی بیماریوں کو دور کرنے میں مدد دیتا ہے۔

خشک آملے کا پاؤڈر اگر رات کو پانی میں بھگو دیا جا ئے اور صبح خالی پیٹ اس پانی کو پیا جا ئے تو اس سے نظامِ ہاضمہ کی طاقت بڑھتی ہے اور اس سے کچے آملے کا جوس پینے سے پیٹ کے کیڑے مر جا تے ہیں۔ ایک ہفتے تک ضرور کر نا چاہیے تبھی اس کا فرق نظر آ ئے گا خشک آملے کا پاؤڈر اگر ہم مولی کے ساتھ کھا ئیں یا پھر اسے مولی میں بھر کر کھا ئیں۔ تو اس سے باتھ روم سے جڑی سبھی مسئلے حل ہو جا ئیں گے ۔ آملے کے بے شمار فوائد ہیں کہ جن کے بارے میں بہت ہی زیادہ تحقیق کی گئی ہے اور تحقیقات کے بعد ہمیں یہ معلوم ہوتا ہے کہ آملے کے صحت کے لیے بہت سے فوائد ہیں۔ آملہ دل بالوں اور آنکھوں کے لئے بے مفید ہے یونان اور عرب کے اطباء کے مطابق یہ دوسرے درجے میں رد اور خشک کہا ہے اس کو قابض ہابض مقوی معدہ مقوی اعصاب اور تبخیر کو دور کرنے والا کہا جاتا ہے

آملہ معدہ اور آنتوں کی بعض بیماریوں میں خاص طور پر مفید ہے معدہ کے گیسٹرک جوس کی زیادتی اور غلیظ رطوبتوں کو جذب کر کے زائل کر دیتا ہے اس کے علاوہ ہر قسم کے اسہال دست بد ہضمی بھوک کی کمی متلی قے ابکائی ہچکی معدہ کی غلاظت پیچش اور معدہ آنتوں کی سوزش وغیرہ میں مفید ہے ان تمام بیماریوں کے لئے آملہ کا مربہ کا لگاتار استعمال نہایت مفید ہے آملہ دماغ کو طاقت دیتا ہے اور غلیظ بخارات کو سر کی طرف چڑھنے سے روکتا ہے ایسے سردرد میں مفید ہے جس میں آنکھوں کے آگے ااندھیرا چھاتا ہو چکر آتے ہوں آملہ بالوں کے لئے بھی انتہائی مفید ہے اس کے استعمال سے بال گھنے چمکدار اور سیاہ ہو تے ہیں رات کو پانی میں آملے بھگو دیں صبح اٹھ کر اس پانی سے سر دھو لیں آملہ پھیہھڑوں اور سینوں کو مضبوط بناتا ہے آملہ کا مربہ روزانہ دو عدد دانون کا استعمال سل اور ٹی بی سے محفوظ رکھتا ہے

آملہ کو بہترین مقوی قلب مانا جاتا ہے کیونکہ آملہ مصفی خ ون ہے اور دل اور خ ون کا بہت گہرا تعلق ہے تقویت دل کے لئے آملہ کے مرکبات اور آملہ کا مربہ نہایت مفید ہیں روزانہ صبح سویرے ایک عدد آملہ کے مربے کا دانہ چاندی کے ورق میں لپیت کر کھانے اور اپور سے ایک گلاس دودھ پینے سے دل کو تقویت ملتی ہے آملہ لے جوس کے بھی بے شمار فوائد ہیں آملہ وٹامن سی کا خزانہ ہے اور ایک صحت مند رس ہے یہ قبض معدہ اور دمہ میں نہایت مفید ہے خ ون کی کمی دور کرتا ہے اس کے استعمال سے ہیمو گلوبن کی سطح بڑھ جاتی ہے قوت مدافعت بہتر بناتا ہے بہترین قبض کشا ہے

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *