دل توڑ دیتے ہیں لو گ کیوں چھوڑ دیتے ہیں جو جیسا ہے اس کے ساتھ ویسا بننا سیکھو

برے وقت کی ایک خاصیت ہے کہ وہ آپ کو وہ لوگ بھی صلاح دینے لگ جاتے ہیں جو خود کسی قابل نہیں ہوتے

۔ ہمیشہ یہ بات یادرکھنا کہ زندگی میں بہت دور تک جانا پڑتا ہے یہ جاننے کے لیے کہ آپ کے نزدیک کون ہے۔جھ وٹی باتوں پرجو لوگ واہ واہ کریں گے ۔ وہی ایک دن آپ کو تباہ کریں گے ۔ کسی نے کیا خوب کہا ہے کہ میں پسند تو ہوں بہت لوگوں کی لیکن تب جب انہیں ضرورت ہوتی ہے۔ پریشانی میں کسی کا مذاق نہ اڑاؤاو رخوشی میں کسی کو طعنہ نہ دو اس سے رشتوں میں موجود پیار ختم ہوجاتا ہے۔

اپنی انگلیوں کا استعمال ہمیشہ اپنے گن اہوں کو گننے کےلیے کرو دوسروں پر انگلیاں اٹھانے کے لیے نہیں۔ یہ ایک کڑوا سچ ہے جب تک خود پر نہ بیتے تب تک دوسروں کے درد کا احساس ہی نہیں ہوتا۔ زندگی میں اگر کوئی کمی رہ جائے تو ادا س مت ہونا کیونکہ ادھوری خواہشیں ہی جینے کا مزہ دیتی ہیں۔ کچھ لوگ پگھل کر موم کیطرح رشتے نبھاتے ہیں ۔ اور کچھ لوگ آگ بن کر انہیں جلاتے ہی رہتے ہیں۔ تالے سے سیکھناساتھ نبھانے کا ہنر وہ ٹوٹ تو جاتا ہے مگر چابی نہیں بدلتا۔

دل سے اترے ہوئے لوگ اگر سامنے بھی آجا ئیں تو نظر ہی نہیں آتے ۔ ہمیشہ یہ بات یاد رکھنا کہ لفظ انسان کے غلام ہوتے ہیں۔ مگر بولنےسے پہلے بولنے کے بعد انسان اپنے الفاظ کا غلام بن جاتا ہے۔ کبھی کسی کے ساتھ اتنی امیدیں مت رکھنا کہ امید کے ساتھ تم بھی ٹو ٹ جاؤ۔ ٹوٹ جاتے ہیں وہ رشتے اکثر جن کو نبھانے کی کوشش اکیلے ہی کی جاتی ہے۔ وہ رشتہ کبھی نہیں ٹوٹتا جس میں نبھانے کی چاہت دونوں طرف سے ہو۔ کامیاب رشتے کا یہ اصول ہے بھول جائیے جو بات فضو ل ہے۔

ہمیشہ یہ بات یاد رکھنا کہ انسان کو دکھ نہیں توڑتا دکھ میں اپنوں رویہ اسے توڑدیتا ہے ۔ ذرا سی رنجش پر نہ چھوڑنا اپنوں کا دامن ۔ زندگی بیت جاتی ہے۔ اپنوں کو اپنابنانے میں۔ جب انسان ہی نہیں رہے گا تو اس کی غلطیوں کاکیاکرو گے کس سے روٹھو گے کسے مناؤ گے ۔ کسے معاف کرو گے کسے سزا دو گے اس لیے جو پاس اس کی قدر کرنا سیکھو۔ کچھ ہنس کر بول دیاکرو۔ کچھ ہنس کر ٹال دیاکرو۔ یوں تو بہت پریشانیاں ہیں تم کو بھی اور مجھ کو بھی پر کچھ فیصلے وقت پر ڈال دیا کرو۔ اور زندگی میں ہر روز کچھ نیا سیکھو۔ نیا سوچو ۔نیا کرو۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.