حمل کے دوران ہونے والی قبض

آج میں جو میں نے ایک چھوٹی سا سرکل چلا یا کہ میں پریگنینسی میں ہونے والے جو مسئلے مسائل ہیں وہ آپ کے ساتھ ڈسکس کروں انکا جو ہے آپ کو علاج بتا سکوں تو آپ جو ہے آج بھی میں اسی حوالے سے آپ سے باتیں شیئر کرنے لگی ہوں کہ پر یگنینسی کے دوران جو ہے بہت زیادہ قبض کی شکایت بھی ہو جاتی ہے تو اس کو کس طرح سے دور کیا جا سکتا ہے۔ تو میں میری باتیں بتانے سے پہلے ایک التماس کروں گی کہ میری باتوں کو بہت ہی زیادہ توجہ سے سنیے گا تا کہ مستقبل میں کسی بھی قسم کی تکلیف آپ کو حمل کے دوران نہ ہو سکے۔

آپ کو جو ہے پریگنینسی کے دوران قبض ہو جاتی ہے کافی زیادہ جو ہے اس کی وجو ہات ہو سکتی ہیں ۔ اچھا جی۔ سب سے پہلے جو میں آپ کو علاج بتانا چاہوں گی اور وہ یہ ہے کہ جو آپ غلطی کرتی ہو تو آپ کو واش روم جا نا ہے آپ کو حاجت ہو رہی ہے تو آپ اسی ٹائم جاؤ آپ اسے روکو نہیں کیو نکہ قدرتی طور پر سٹول جب ضائع ہونا ہوتا ہے تو اس میں پانی آ جاتا ہے پانی کی مدد سے رفع حاجت ہو جاتی ہے لیکن اگر آپ اس کو روک دو گے تو پانی جو ہے وہ جذب ہو جاتا ہے جس کی وجہ سے قبض کا مسئلہ ہو جاتا ہے تو آپ کو واش روم جا نا ہو تو آپ اسی ٹائم جاؤ۔ اور جب امید سے ہوں تو آپ کو موڈ استعمال کر و۔ فلش استعمال نہ کرو۔

کو موڈ استعمال کروکیونکہ اس سے بھی آپ کا جو نیچے کا حصہ ہے اس پر زور پڑ تا ہے تو آپ کوشش کرو کہ آپ کوموڈ استعمال کرو۔ تیسرے نمبر پر آ ئرن کی دوائیں پریگنینسی میں لینی ہی لینی ہوتی ہیں تو اس کی وجہ سے آ پ کو قبض کا مسئلہ ہو جاتا ہے تو جس ڈاکٹر سے بھی چیک کروا رہے ہو تو اسے کہو کہ آپ کی دواء تبدیل کر یں۔ تو آپ آئرن کے ساتھ کچھ ایسی چیزیں شامل کر لو جو آ پ کو قبض نہ ہونے دیں جیسا کہ آپ زیتون کا تیل گرم دودھ میں ڈال کر پیو ۔ ٹھیک ہے؟ اور اگر آپ یہ نہیں کر سکتے تو آپ اس کو استعمال کرو پانی کے ساتھ۔ اور اگر پانی کے ساتھ استعمال نہیں کر سکتے تو اس کو سیون اپ یا کوک کے ساتھ اس کو استعمال کرو۔

یہ آپ کی جو ہے قبض کے مسئلے کو حل کرے گا۔ اچھا جی۔ آپ جو ہے غذائیں۔ آپ ایسی غذائیں استعمال کرو جس میں فائبر استعمال کرو۔ مثلاً کہ آپ کاجو استعمال کرو۔ آپ فروٹس میں کنوں استعمال کرو۔ کیلا استعمال کرو۔ آ گے تر بوز آ ئیں گے ۔ تربوز کو استعمال کر و۔ فروٹس کے اوپر جو ہے فوکس کرو۔ چاول بلکل چھوڑ دو۔ چاول جو ہے وہ آپ کو قبض کر یں گے۔ روٹی کھائیں کیو نکہ روٹی میں فائبر ہوتا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.