خاتون نے اپنے شوہر کو اس کی محبوبہ کے ساتھ رنگے ہاتھوں پکڑلیا، لیکن پولیس کے پاس پہنچی تو ایسا جواب ملا کہ حیران پریشان رہ گئی

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ایک خاتون نے اپنے شوہر کو غیر عورت کے ساتھ رنگے ہاتھوں پکڑ لیا اور انہیں گھیر کر پولیس سٹیشن لے گئی تاکہ ان کے خلاف مقدمہ درج کروا سکے لیکن پولیس والوں نے ایسا ٹکا سا جواب دے ڈالا کہ خاتون سٹپٹا کر رہ گئی۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق یہ واقعہ بھارتی ریاست اتر پردیش کے ضلع باندہ میں پیش آیا جہاں یہ آدمی اپنی محبوبہ کے ساتھ گاڑی میں بیٹھا ڈوسے نوش فرما رہا تھا کہ اسی

دوران اس کی بیوی اپنے بھائی کے ہمراہ وہاں آ گئی اور دونوں کو رنگے ہاتھوں پکڑ لیا۔رپورٹ کے مطابق خاتون اور اس کا بھائی انہیں پکڑ کر سول لائنز پولیس سٹیشن لے گئے اور ایف آئی آر درج کروانا چاہی لیکن پولیس والوں نے یہ کہہ کر آدمی کے خلاف مقدمہ درج کرنے سے انکار کر دیا کہ ”اب بھارت میں زناکاری جرم نہیں رہی۔“ پولیس والوں نے خاتون کے شوہر کو محض ایک وارننگ دی اور چھوڑ دیا۔ واضح رہے کہ 2018ءمیں بھارتی سپریم کورٹ کے ایک 5رکنی بنچ نے انڈین پینل کوڈ کے سیکشن 497ءکو منسوخ کر دیا تھا۔ یہ دفعہ کاری کے متعلق تھی چنانچہ بھارت میں اس دفعہ کے خاتمے کے بعد زناکاری قانونی طورپر جرم نہیں رہی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.